اچانک ہوا اُلٹی چل پڑی، حالات نے ’ اوور ٹیک‘ کر لیا۔۔۔!!! پاکستانی سیاست میں بڑی تبدیلی ، قوم کو سر پرائز دے دیا گیا

اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک) مسلم لیگ ن کے خواجہ آصف نے کہا ہے کہ وقت اور ہوا بدل رہی ہے، حالات اوورٹیک کررہے ہیں، تبدیلی کیلئے ہم کسی سازش یا ڈیل کا حصہ نہیں بنیں گے، چاہتے ہیں تبدیلی کسی کی کفالت میں نہ آئے۔ انہوں نے قومی اسمبلی کے اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ

اس وقت زیادہ فائدہ اٹھانے والے حکومت میں ہیں، دولت اور اقتدار کی حوس ہے۔موجودہ وزیراعظم نے تنخواہ لی جبکہ باقی تمام ارکان نے سیلاب زدگان کو فنڈ کردی۔ وزیراعظم کا سیلاب زدگان کی مددوالی لسٹ میں نام نہیں ہے۔ دفترکے پاس ریکارڈ ہے ان لوگوں نے سیلاب زدگان کو پیسے نہیں دیے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم فرماتے تھے کہ مہنگائی ہوتو سمجھ لینا حکومت کرپٹ ہے۔ کیونکہ مہنگائی بڑھتی ہے تو ٹیکس بڑھتا ہے جس سے ثابت ہوتا ہے کہ حکومت کرپٹ ہے۔حکومت نے 18ماہ میں جو کچھ کیا اور کہا کہ وہ مجھے بیان کرنے کی ضرورت نہیں۔ وزیراعظم کہتے تھے کہ بجلی کی قیمت 50 فیصد کم ہوسکتی ہے۔ لیکن اب بجلی کی قیمت50 فیصد کم نہیں کی گئی بلکہ بڑھ گئی ہے۔ اچھا ہوتا کہ حکمرانوں کے کنٹینرز کے فرمودات اسکرین پر چلائے جاتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ یہ حکمران خود اپنے دشمن بنے ہوئے ہیں۔ وقت اور ہوا بدل رہی ہے، حالات اوورٹیک کررہے ہیں، تبدیلی کیلئے ہم کسی سازش یا ڈیل کا حصہ نہیں بنیں گے، چاہتے ہیں تبدیلی کسی کی کفالت میں نہ آئے۔انتظار کریں موجودہ حکومت جب اپنی کرپشن کے بوجھ سے گر جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ ایف آئی اے نے چینی بحران پر اپنی رپورٹ وزیراعظم کو جمع کرو ا دی ہے۔ایف آئی اے نے یسے نام دیے جن کی وجہ سے بحران پیدا ہوا ہے۔ حکومت چینی اور آٹا مافیا کیلئے پناہ گاہ بنی ہوئی ہے۔ اسحاق ڈار کا گھر پناہ گاہ میں تبدیل کیا جاسکتا ہے۔ سیاستدانوں پر اتنے گھٹیا وار کرکے سیاستدانوں کی توہین کی گئی۔