بریکنگ نیوز۔۔۔!!! ٹرمپ انتظامیہ کا جنرل قمر جاوید باجوہ سے ہنگامی رابطہ، ایران کے حوالے سے پاکستان سے مدد مانگ لی

راولپنڈی(نیوز ڈیسک ) امریکہ کا جنرل قمر جاوید باجوہ سے ہنگامی رابطہ، خطے میں پیدا ہونے والی صورتحال کے حوالے سے پاکستان سے باقاعدہ مدد مانگ لی. وفاقی وزیر غلام سرور خان کا کہنا ہے کہ امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیو نے گزشتہ روز ہوئے رابطے کے دوران آرمی چیف جنرل قمر

جاوید باجوہ سے کہا کہ ایران سے بات کریں۔ تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر برائے ہوا بازی غلام سرور خان نے کہاہے کہ پاکستان کا خطے میں ہمیشہ مثبت کر دار رہا ہے ۔ امریکی وزیر خارجہ نے گزشتہ روز آرمی چیف کو فون کیا، اس دوران جنرل باجوہ نے مائیک پومپیو کو یہی کہا ہو گا کہ تھوڑا ٹھنڈے ہو جائیں لیکن کسی کو سپورٹ کرنے کے حوالے سے بات نہیں کی ہو گی۔ پاکستان کا اس خطے میں ہمیشہ مثبت کردار رہا ہے،دونوں ہمارے برادر اسلامی ملک ہیں۔ وفاقی وزیر کا کہنا ہے کہ کوئی بل جب اسمبلی میں لایا جاتا ہے کہ ہر ممبر کو یہ حق حاصل ہے کہ وہ اپنی تجاویز سے سکتا ہے۔تمام اسٹینڈنگ کمیٹی میں بھی اپوزیشن کے ارکان موجود ہوتے ہیں۔ یہ بات طے ہو چکی ہے اس پر لمبی بات نہیں کی جائے گی، زیادہ تر باتیں پہلے پی ہو چکی ہے۔ قومی ایشوز پر حکومتیں اور اپوزیشن ایک پیج پر ہوتی ہیں ۔ نیب قوانین میں ترمیم کے حوالے سے غلام سرور خان کا کہنا ہے کہ نیب آرڈیننس پر میرے اپنے بھی تحفظات تھے مگر اس کی توسیع تو اپوزیشن بھی کرنا چاہ رہی تھی۔ پیپلزپارٹی اور ن لگ نے پانچ پانچ سال گزارے مگر انہوں نے کوئی فیصلہ نہیں کیا۔ نیب کی کاروائیوں کے باعث معیشت دبائوکا شکار تھی۔ تاہم اب بھی شفافیت کا پراسس جاری رہے گا جو ریفرنس عدالت میں جا چکے انکا ٹرائل ہو گا،اینٹی کرپشن ادارہ موجود ہے کام کر رہا ہے۔