139

بریکنگ نیوز:اورنج ٹرین کے منصوبے کی کامیابی کا جشن،ن لیگ نے افتتاح کے موقع پر ایسا کام کرنے کا اعلان کردیا کہ کسی کے وہم و گمان میں بھی نہ ہوگا

لاہور(ویب ڈیسک) پاکستان مسلم لیگ(ن) نے اورنج لائن میٹرو ٹرین کے افتتاحی منصوبے کی کامیابی کا جشن منانے کا فیصلہ کر لیا،(ن) لیگ کی جانب سے افتتاح کے موقع پر مسافروں میں پھول اور (ن) لیگ کے فلاحی منصوبوں کے پمفلٹس تقسیم کئے جائیں گے جبکہ اس حوالے سے اہم اجلاس آج (منگل) کے روزطلب کر

لیا گیا جس میں لاہور سے تعلق رکھنے والے ممبران اسمبلی شرکت کریں گے۔پاکستان مسلم لیگ(ن) کے صدرمحمد شہباز شریف نے گزشتہ روز لاہور کے سیکرٹری خواجہ عمران نذیر کو ٹیلی فون کیا۔ شہباز شریف کا کہنا تھاکہ حکومت ہمارے عوامی منصوبوں پر صرف تختیاں لگا سکتی ہے،ہم کسی عوامی منصوبے کی راہ میں رکاوٹ نہیں بنیں گے،ہمارے ادوار کے شروع کیے گئے عوامی فلاحی منصوبے ملکی ترقی میں سنگ میل ثابت ہوں گے۔شہباز شریف نے کہا کہ دو سال تک اورنج ٹرین منصوبے کی تاخیر میں موجودہ حکومت کی مجرمانہ غفلت ہے۔ذرائع کے مطابق مسلم لیگ (ن) کے لاہور سے تعلق رکھنے والے اراکین اسمبلی کا اجلاس آج طلب کر لیا گیا ہے۔شہباز شریف نے تمام کارکنوں اور ممبران اسمبلی کو 10دسمبر کو اورنج لائن میٹرو ٹرین اسٹیشن پر پہنچنے کی ہدایت کر دی ہے۔ن لیگ افتتاح کے موقع پر مسافروں میں پھول اور (ن) لیگ کے فلاحی منصوبوں کے پمفلٹس تقسیم کرے گی۔تمام لیگی ممبران اسمبلی ہر اسٹیشن پر موجود ہوں گے۔ پاکستان مسلم لیگ(ن) نے اورنج لائن میٹرو ٹرین کے افتتاحی منصوبے کی کامیابی کا جشن منانے کا فیصلہ کر لیا،(ن) لیگ کی جانب سے افتتاح کے موقع پر مسافروں میں پھول اور (ن) لیگ کے فلاحی منصوبوں کے پمفلٹس تقسیم کئے جائیں گے جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق ہنگامی طور پر بلایا جانے والے پاکستان تحریک انصاف کے ورکرز کنونشن میں پارٹی کے نظریاتی کارکن پھٹ پڑے اور پی ٹی آئی کے اندر مختلف گروپ بندیاں واضح ہوکر سامنے آگئیں۔ پاکستان تحریک انصاف2013کے انتخابات میں ضلع چکوال کی دو قومی اور چار صوبائی اسمبلی کی نشستوں پربری طرح سے پٹی تھی، سردار غلام عباس نے آزادی امیدوار کی حیثیت سے حلقہ این اے64 اور پی پی23میں دوسری پوزیشن حاصل کی تھی۔ اس کے بعد پانچ سال کے عرصے میں سردار غلام عباس جنہوں نے2013کے انتخابات میں دونوں حلقوں سے ایک لاکھ 55ہزار ووٹ حاصل کیے تھے وہ2017میں مسلم لیگ ن میں شامل ہوگئے اس طرح ضلع چکوال کے سیاسی معاملات مکمل طو رپر یکطرفہ ہوگئے اور اپوزیشن بالکل سمٹ کر رہ گئی۔ پیپلز پارٹی بھی2013کے الیکشن میں بری طرح سے پٹی تھی اور اس کے پاس تو امیدوار ہی کوئی نہیں تھے۔ پیپلز پارٹی کی چوتھی پوزیشن تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں