689

پاکستان کے خلاف سازش رچانے والوں کو منہ کی کھانا پڑ گئی۔۔۔ لندن برج حملے کی ذمہ داری کس نے قبول کی؟ یقین کرنا مشکل

لندن (ویب ڈیسک) پاکستان کے خلاف سازش رچانے والوں کو منہ کی کھانا پڑ گئی۔۔۔ لندن برج حملے کی ذمہ داری کس نے قبول کرلی؟ یقین کرنا مشکل۔ لندن برج کے قریب چاقو بردار کے حملے میں 3 افراد کی ہلاکت کی ذمہ داری عالمی دہشت گرد تنظیم داعش کی جانب سے قبول کی گئی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی جانب سے جاری اطلاعات کے مطابق داعش کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ لندن میں 3 افراد کو قتل کرنے والا ہمارا جنگجو تھا، تاہم داعش کی جانب سے اس حوالے سے کسی قسم کے شواہد پیش نہیں کیے گئے ہیں۔ واضح رہے کہ 2 روز قبل لندن برج کے قریب چاقو بردار شخص نے حملہ کر کے 3 افراد کو ہلاک، جب کہ 3 کو زخمی کر دیا تھا۔ پولیس نے حملہ آور کے خلاف 5 منٹ میں کارروائی کرکے اسے گولی مار کر ہلاک کیا۔ حملہ آور نے جعلی خود کش جیکٹ بھی پہنی ہوئی تھی، جسے دکھا کر وہ لوگوں کو ڈراتا رہا۔ حملہ آور کی شناخت 28 سالہ عثمان خان کے نام سے کی گئی، جو پہلے بھی لندن اسٹاک ایکسچینج پر حملے کی سازش میں جیل کاٹ چکا تھا اور دسمبر 2018 میں رہا ہوا تھا۔ لندن کے علاقے لندن برج پر چاقو سے حملہ کرنے والے شخص کو شناخت کرلیا گیا ہے۔ حملہ آور کا نام عثمان خان ہے، جس کی عمر 28 سال تھی۔ برطانوی میڈیا نے حملہ آور کو پاکستانی شہری قرار دے دیا۔ برطانوی ذرائع ابلاغ سے جاری خبروں کے مطابق 28 سالہ عثمان خان کے حملے میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد 3 ہوگئی ہے، جب کہ حملے میں 3 افراد زخمی بھی ہوئے۔ برطانوی پولیس حکام کے مطابق ملزم پہلے بھی جيل کاٹ چکا ہے۔ عثمان خان کا تعلق پاکستان سے بتایا گیا ، جب کہ اس نے برطانوی شہریت بھی حاصل کی جو سراسر غلط معلومات ہے۔ دراصل اب داعش نے حملے کی ذمہ داری قبول کر لی ہے جبکہ پاکستان کے خلاف پراپیگینڈا ہو گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں